Connect with us

کرک

کرک یونیورسٹی میں نئی تحقیقی جہتوں اور روایات پر ورکشاپ کا انعقاد

شعبۂ انگریزی خوشحال خان خٹک یونیورسٹی کرک میں نئی تحقیقی جہتیں اور روایات پر دو روزہ عملی ورکشاپ کا انعقاد

خوشحال خان خٹک یونیورسٹی کرک کے شعبۂ انگریزی، کے زیرِ انتظام انگریزی ادب کے سکالرز کے لئے نئی تحقیقی جہتوں اور روایات پر دو روزہ عملی ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا- اس ورکشاپ میں ایم-فل کے طلباء و طالبات نے انتہائی انہماک اور دلچسپی سے حصہ لیا۔

اس سلسلے میں جاری کردہ یو نیورسٹی کی ایک پریس ریلیز کے مطابق ورکشاپ کا افتتاح ضلع کرک کے مایہ ناز دانشور اور ممتاز ماہرِ تعلیم پروفیسر عارف خٹک نے کیا۔

انہوں نے اپنے افتتاحی خطاب میں شعبۂ انگریزی، خوشحال خان یو نیورسٹی کرک کی شاندار علمی اور تحقیقی کاوشوں کا سنہرے الفاظ میں ذکر کیا۔ بالخصوص سربراہ شعبۂ انگریزی، خوشحال خان خٹک یونیورسٹی، ڈاکٹر سید حنیف رسول کاکا خیل کی انتھک اور بے مثال کاوشوں کو سراہا جنہوں نے ضلع کرک میں ادبی سرگرمیوں کی داغ بیل ڈالی اور کرک کی آنے والی نسلوں کی تعلیم و تربیت کی اپنا نصب العین بنایا۔

ورکشاپ سے اپنے افتتاحی کلمات میں پرنپسل آرگنائزر اور صدر شعبہ ڈاکٹر سید حنیف رسول کاکا خیل نے کہا کہ انگریزی ادب کے سکالرز کو ہیومینیٹیز میں تحقیق کے نئے زاویوں سے متعارف کرانا ایک اہم کام ہے۔

شعبہ انگریزی نے اس بات کا عزم کیا ہے کہ اپنے سکالرز کو ادبی تحقیق کے میدان میں جدید اور متنوع موضوعات سے روشناس کراے۔ صدر شعبہ نے ڈائریکٹر اورک ڈاکٹر محمد زبیر اور اورک آفس کی طرف سے ورکشاپ کے انتظامات میں تعاون کو سراہا۔
ورکشاپ کے پہلے روز خیبر پختونخوا کے ممتاز ادیب، نقاد اور محقق ڈاکٹر سمیع الدین ارمان نے ٹرانس ہیو مینینٹیز کے نئے پہلووں کی نشاندہی کرتے ہوے متوازی تحقیقی امکانات، توقعات، تصورات اور اعتراضات پر انتہای مدبرانہ انداز سے گفتگو کی۔ پہلے روز کے دوسرے سیشن میں انگریزی ادب کے نوجوان محقق یاسر علی خان (سرمد) نے انگریزی ادبیات میں متعارف نئے تحقیقی تناظر سے طلباء و طالبات کو روشناس کرایا۔
ورکشاپ کے دوسرے روز شعبۂ لائبریری سائنس کے ڈاکٹر غالب خان نے تحقیقی میدان میں مستند ماخذات تک رسائی اور اس کے مشکلات جبکہ ڈاکٹر انور خان، ڈائریکٹر اکیڈمک اینڈ ریسرچ نے بشریات کے میدان میں علم تشریح و تاویل کی اہمیت پر سیر حاصل گفتگو کی۔
اس دو روزہ تحقیقی ورکشاپ میں پروفیسر نعمت اللہ خٹک اور ڈاکٹر بنارس خان خٹک جیسے اکابرین نے شرکت کی اور ابھرتے ہوئے محققین کی حوصلہ افزائی کی۔

اختتامی تقریب کے مہمان خصوصی وائس چانسلر، خوشحال خان خٹک یونیورسٹی، ڈاکٹر محمد نصیر الدین نے شعبہ انگریزی کی فعالیت اور علمی و ادبی سرگرمیوں کو سراہتے ہوئے خراج تحسین پیش کیا اور طلباء و طالبات کو تحقیق کی اہمیت اور اپنے اساتذہ کرام کے علمی استعداد اور تحقیقی مہارتوں سے بھر پور استفادہ کرنے کی تلقین کرتے ہوئے بھر پور تعاون کا اعادہ کیا۔