Connect with us

دنیا

کرغزستان سے مزید 205 طلباء کراچی پہنچ گئے۔

کرغزستان

کرغزستان سے مزید 205 طلباء کراچی پہنچ گئے۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے جمعرات کو بشکیک میں گزشتہ ہفتے ہونے والے ہجوم کے حملوں کے بعد کراچی کے جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر کرغزستان سے واپس آنے والے طلباء کا استقبال کیا۔

ایک روز قبل نائب وزیراعظم اسحاق ڈار نے کہا تھا کہ کرغزستان سے آنے والے پاکستانی طلباء کی تعداد 3000 سے تجاوز کر گئی ہے اور توقع ہے کہ آدھی رات تک ان کی تعداد 4000 سے تجاوز کر جائے گی۔

اسلام آباد میں ان کی پریس کانفرنس منگل کو بشکیک کے دورے کے بعد ہوئی جہاں انہوں نے حکام سے بین الاقوامی طلباء کو نشانہ بنانے والے ہجوم کے حملوں کے بارے میں بات کی، جن میں پاکستانی بھی تھے۔

ایئرپورٹ پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیراعلیٰ مراد نے کہا کہ جمعرات کی پرواز میں 205 طلبا کو واپس لایا گیا، جن میں سے 99 کا تعلق کراچی سے تھا۔

حیدرآباد سے 22، خیرپور سے 13، نوشہروفیروز سے 15، سکھر اور نواب شاہ سے 12، 12، بدین، دادو، میرپورخاص اور جیکب آباد سے پانچ، پانچ، ٹنڈو آدم سے تین، جامشورو اور کشمور سے دو، دو اور کشمور سے ایک ایک کا تعلق تھا۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ طلباء کے لیے اپنے آبائی علاقوں کو واپس جانے کے لیے انتظامات کیے گئے ہیں۔

کرغزستان کا واقعہ ان بچوں، ان کے والدین اور پورے ملک کے لیے ایک بڑا مسئلہ تھا۔ اس میں ان کا کوئی قصور نہیں تھا، وہ پڑھنے گئے تھے۔

انہوں نے کرائسس مینجمنٹ سیل کے قیام میں وزارت خارجہ کے فوری ردعمل کا اعتراف کیا۔

وزیراعلیٰ مراد نے بتایا کہ کرغزستان میں 180 طلباء ابھی باقی ہیں جن میں سے چھ کو معمولی زخم آئے ہیں۔

وزارت خارجہ کو مطلع کیا گیا ہے کہ سندھ حکومت بقیہ طلباء کی وطن واپسی کے اخراجات برداشت کرے گی، وزیراعلیٰ نے کہا کہ زخمیوں کا طبی معائنہ کیا جائے گا۔

طلباء کی تعلیم کو آگے بڑھانے کے حوالے سے وزیراعلیٰ مراد نے اعتراف کیا کہ وزیر اعظم شہباز شریف نے کرغزستان سے واپس آنے والے طلباء کو پاکستانی میڈیکل کالجوں میں ایڈجسٹ کرنے کے لیے ڈار کی سربراہی میں 25 رکنی کمیٹی قائم کی ہے۔

وزیراعلیٰ نے طلباء کی سہولت اور ان کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے کرغزستان میں اپنے رابطوں کو استعمال کرنے پر خاص طور پر پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی تعریف کی۔

ہمارے شہریوں کی ذمہ داری، وہ دنیا کے کسی بھی کونے میں ہوں، حکومت پاکستان کی ذمہ داری ہے۔

بچے اپنی تعلیم کے لیے بیرون ملک جاتے ہیں، ہمارے مزدور، ٹیکنیکل لوگ بیرون ملک جاتے ہیں، وہ زرمبادلہ کماتے ہیں وہ اپنے خاندانوں کی دیکھ بھال کرتے ہیں، اور یقیناً حکومت پاکستان کی ذمہ داری ہے کہ وہ ہر وقت ان کی حفاظت کو یقینی بنائے۔

کرغزستان سے مزید 205 طلباء کراچی پہنچ گئے۔
Continue Reading
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *