Connect with us

دنیا

اسرائیلی سنائپرز غزہ میں شہریوں پر حملہ کر رہے ہیں۔

اسرائیلی سنائپرز غزہ میں شہریوں پر حملہ کر رہے ہیں۔

اسرائیلی انخلاء کے حکم کے بعد غزہ شہر چھوڑنے والے فلسطینیوں کا کہنا ہے کہ یرموک اسٹیڈیم کے قریب اسنائپرز نے شہریوں کو گولی مار کر ہلاک کردیا۔

غزہ شہر کے متعدد شہریوں کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج کی جانب سے انخلاء کا نیا حکم جاری کرنے اور فلسطینیوں کو جنوب کی طرف جانے کے لیے کہا گیا جب کہ اس نے چھاپے میں اپنی جارحیت کو بڑھایا تو لوگوں کو سنائپرز نے گولی مار کر ہلاک کر دیا۔
مبینہ طور پر یہ حملے اس وقت ہوئے جب شہریوں نے غزہ شہر کے متعدد محلوں کو خالی کر دیا، انہیں بدھ کو وہاں سے نکل جانے کا حکم دیا گیا، یہاں تک کہ جب قطر، امریکہ اور مصر کے ثالث دوحہ میں اسرائیلی حکام سے جنگ بندی کے لیے بات چیت کے لیے ملاقات کر رہے تھے۔

ایک شخص نے الجزیرہ کو بتایا کہ وہ یرموک سٹیڈیم کے قریب بیٹھا تھا جب اس نے دیکھا کہ ایک اسرائیلی اسنائپر سائیکل پر سوار ایک شخص کو گولی مار رہا ہے جو ڈبہ بند کھانا لے جا رہا تھا۔ اس نے کہا کہ اسنائپر نے اسے براہ راست گولی مار دی۔

اسرائیلی سنائپرز

ایک عینی شاہد نے بتایا، ہم اس کی لاش کو ہٹا نہیں سکے۔ حتیٰ کہ پیرا میڈکس بھی گلی میں داخل نہیں ہو سکے۔ وہ اس شخص کی لاش کو نکال یا ہٹا نہیں سکے۔

ایمبولینس کے عملے نے بتایا کہ انہیں لاشیں ہٹانے کی ہدایت نہیں ملی تھی اور انہیں خبردار کیا گیا تھا کہ اگر کوئی شخص مردہ افراد کے قریب جائے گا تو اسے گولی مار دی جائے گی۔

ایک خاتون نے الجزیرہ کو بتایا کہ وہ یرموک اسٹیڈیم سے گزرنا چاہتی تھی لیکن اسے بتایا گیا کہ گلیوں میں فلسطینیوں کی لاشیں پڑی ہیں جنہیں اسرائیلی سنائپرز نے گولی مار کر ہلاک کیا تھا۔

ہم پیرا میڈکس اور فائرفائٹرز سے مدد مانگنے آئے تھے تاکہ کم از کم مردہ جسموں کو ہٹا لیا جائے تاکہ وہ گلی میں نہ رہیں، اس نے کہا۔ انہیں دفن کرنے کی ضرورت ہے۔

متعدد افراد نے بتایا کہ انہوں نے ایک شخص کو گلی میں چلتے ہوئے دیکھا جسے ایک ٹاور سے نشانہ بنا کر سنائپر نے سر میں گولی مار دی۔ بعد میں کئی لوگوں نے اس کی لاش کو ہٹانے میں کامیابی حاصل کی۔

Continue Reading
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *