Connect with us

پاکستان

چینیوں پر حملے کی منصوبہ بندی افغانستان میں کی گئی، ڈی جی آئی ایس پی آر

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ چینیوں پر حملے کی منصوبہ بندی افغانستان میں کی گئی۔

میجر جنرل احمد شریف نے کہا کہ غیر قانونی تارکین وطن کو واپس بھیجنے کا فیصلہ ملکی مفاد میں کیا گیا، 5 لاکھ سے زائد غیر قانونی تارکین وطن کو واپس بھیجا گیا۔

انہوں نے کہا کہ خطےمیں قیام امن کے لیے پاکستان کا کردار کسی سےڈھکا چھپا نہیں۔

چینی انجینئرز کو گزشتہ ماہ اس وقت نشانہ بنایا گیا جب وہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کے منصوبوں سے منسلک پاور پلانٹ پر اپنی ڈیوٹی پر جا رہے تھے. کہ خودکش بمبار نے ان کی بس کے قریب خود کو دھماکے سے اڑا لیا جس کے نتیجے میں ایک شخص ہلاک اور پانچ چینی زخمی ہو گئے۔

جس کے بعد چینی اتھارٹی نے مختلف منصوبوں پر کام روک دیا اور پاکستان سے کہا کہ وہ مجرم کو کٹہرے میں لائے اور حملے کی مناسب تفتیش کرے اور چینی انجینئرز کو سخت سیکیورٹی فراہم کی جائے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل احمد شریف نے پریس بریفنگ میں کہا کہ تحریک طالبان پاکستان پاکستان میں سرحد پار دہشت گردی میں ملوث ہے

گزشتہ چند سالوں سے پاکستان کو کالعدم عسکریت پسند گروپوں جیسے ٹی ٹی پی، بی ایل اے اور دیگر کی شدید مخالفت کا سامنا ہے جو پاکستان کے اقتصادی منصوبوں پر مسلسل حملے کرتے رہتے ہیں اور خاص طور پر کے پی کے اور بلوچستان میں کام کرنے والے غیر ملکی انجینئروں کو نشانہ بناتے ہیں۔

گزشتہ سال بی ایل اے نے کراچی میں انجینئرز کو نشانہ بنایا جبکہ کراچی میں ایک لیڈی سوسائیڈ بمبار نے چینی انجینئرز کے کوچ کے قریب خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔

پاکستان نے ٹی ٹی پی کے ساتھ سیکیورٹی اور سیز فائر ڈیل کے حوالے سے ملاقاتیں کرنے کی کوشش کی لیکن حتمی فیصلے میں ناکام رہے۔ پاکستان نے افغان حکومت سے طالبان کو سرحد پار دہشت گردی سے روکنے کے لیے مختلف میٹنگیں بھی کی ہیں بصورت دیگر اگر وہ روکنے میں ناکام رہے تو اس کے سنگین نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا۔

Continue Reading
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *